سر درد کا علاج اب میوزک سے ہوگا

ویسے تو سر کا درد ایک عام مسئلہ ہے پر یے درد خطرناک بھی ہو سکتا ہے،  جو کے ڈپریشن اور اسٹریس کے ساتھ ساتھ مختلف خطرناک دماغی بیماریوں کا سبب بھی بن سکتا ہے۔

اس درد سے نجات پانے کے لئے مختلف ادیات کا استعمال کیا جاتا ہے تاہم سردرد کے ادویات بنانے والی مشہور کمپنی نیوروفین نے ایک میوزک ترتیب دی ہے جسے سن کر سر درد کم کیا جاتا ہے۔

موسیقی کے اس ٹکڑے کا نام ’ٹیون آؤٹ پین‘ رکھا گیا ہے جسے اسپاٹیفائی پر سنا جاسکتا ہے لیکن اس کے لیے آپ کو ویب سائٹ پر خود کو رجسٹر کرانا ہوگا۔

اس کی تیاری میں دماغی ماہرین اور موسیقاروں نے مل کر اپنا کردار ادا کیا ہے۔ موسیقی سے سر میں درد پیدا کرنے والے سگنل کو کمزور کیا جاسکتا ہے۔

یے موسیقی یونیورسٹی کالج ڈبلن کی ماہرِ نفسیات ڈاکٹر کلیئر ہاؤلِن اور موسیقار جوناتھن بیکر نے مشترکہ طور پر ترتیب دی ہے جس میں خاص آلات اور دھنوں کا استعمال کیا گیا ہے۔ اس میوزک میں گٹار، پیانو، گھنٹیوں اور دیگر آوازوں کو شامل کیا گیا ہے۔

اسے ہزاروں مریضوں کو درد کی کیفیت میں سنایا گیا ہے اور ان سے میوزک سننے سے قبل اور بعد میں درد کی شدت کے بارے میں پوچھا گیا ہے۔

اس موقع پر نیوروفین کمپنی کی سربراہ سیزی اُنلوترک کہتی ہیں کہ 80 فیصد مریضوں نے کہا ہے کہ میوزک سننے کے بعد ان کے دردِ سر میں افاقہ ہوا ہے۔

پروفیسر سیزی نے کہا کہ ان کی کمپنی چاہتی ہے کہ کسی طرح دواؤں سے ہٹ کر بھی درد کا علاج کیا جاسکے اور اس ضمن میں یہ پہلی کوشش ہے۔

اس کے ساتھ ساتھ نیوروفِن کے مطابق دردِ سر دور کرنے کے کئی طریقے ہیں ان میں باقاعدہ ورزش، رات کی مکمل اور بہتر نیند، سانس کی مشقیں اور موسیقی سننے جیسے طریقے دوا کے بغیراپنی تاثیر رکھتے ہیں۔

 

 

You might also like

Leave A Reply

Your email address will not be published.