مسلمانوں کے ہزاروں قدیمی مقبروں  میں پراسرار کائناتی ترتیب کا انکشاف

مشرقی سوڈان کے علاقے کسنا میں سیکڑوں سال قبل مسلمانوں کے بنائے ہوئے ہزاروں مقبروں میں کہکشانی جھرمٹوں جیسی پراسرار ترتیب کا انکشاف ہوا ہے

4100 مربع کلومیٹر  پے مشتمل  ایراضی میں دس ہزار سے زیادہ کی تعداد میں چھوٹے بڑے مقبرے پائے گئے ہیں جن میں ٹیومیولس اور قبہ کی ساخت زیادہ نمایاں ہے

آثار قدیمہ کے ماہر اسٹیفانو کونسٹانزو  نے اپنے ساتھیوں کی مدد سے خاص ٹیکنیک "نیمین اسکاٹ کلسٹر پروسیس” سے اس بات کا پتا لگایا ہے

اس ٹیکنیک کو استعمال کرنے پر ہونے والا انکشاف خود ماہرین کےلیے بھی حیرت انگیز تھا: تمام مقبروں کی ترتیب کہکشانی جھرمٹوں جیسی پائی گئی!

اس ترتیب کو سامنے رکھتے ماہرین نے اندازہ لگایا ہے کہ درمیان والے مقبرے غالباً زیادہ اہم اور ’’مقدس‘‘ ہستیوں کے ہیں جبکہ ان کے ارد گرد پھیلے ہوئے چھوٹے مقبرے، ان سے عقیدت رکھنے والوں کے ہیں۔

اتنا سب کچھ معلوم ہوجانے کے باوجود، ماہرین یے سوچنے پر مجبور ہیں کہ آخر یہ مقبرے اس پراسرار کائناتی ترتیب میں ہی کیوں تعمیر کیے گئے ۔

You might also like

Leave A Reply

Your email address will not be published.