مشرف کے قانون میں بھی آئی جی کی مقرری صوبائی حکومت کا استحقاق تھا

وامي آواز رپورٽ
مشرف کے قانون میں بھی آئی جی کی مقرری صوبائی حکومت کا استحقاق تھا
وامي آواز رپورٽ مشرف کے قانون میں بھی آئی جی کی مقرری صوبائی حکومت کا استحقاق تھا

 

مشرف کے قانون میں بھی آئی جی کی مقرری صوبائی حکومت کا استحقاق تھا

 

وفاقی حکومت پولیس کی ایگزیکیٹو اتھارٹی  لگوانا چاہتی ہے جو آئین کی صریحاَ  خلاف ورزی ہے

 

پولیس اور لااینڈ آرڈر پرایگزیکیٹواتھارٹی صرف صوبائی حکومت کی ہی ہے

 

صوبے میں نیچے سے لیکر اوپر تک تمام مقرریوں کا اختیار صرف سندھ حکومت کو ہے

 

صوبائی معاملات پر قانون سازی صوبائی حکومت ہی  کرسکتی ہے وفاق نہیں

 

لا اینڈ آرڈر وفاق کا سبجیکٹ ہی نہیں، اس معاملے پر وہ صوبوں میں مداخلت نہیں کرسکتا

 

وفاق کی اس  مداخلت پر حکومت سندھ کو تو  واضح اسٹینڈ لینا چاہیے

 

سندھ میں جو بھی پولیس افسر ہیں  وہ صوبائی حکومت کے ماتحت کام کرتے ہیں

 

صوبہ چاہےتو اپنی پولیس بھی بنا سکتا ہے

 

 

You might also like

Leave A Reply

Your email address will not be published.