کراچی: عامر لیاقت کی خالی نششت پرچار بڑی جماعتوں میں دنگل

پاکستان تحریک انصاف کے رکن قومی اسمبلی عامر لیاقت کے انتقال سے خالی ہونے والی قومی اسمبلی کی نشست پر ضمنی انتخاب 27 جولائی کو ہوں گے۔

کراچی کے اس حلقے میں پاکستان تحریک انصاف، ایم کیو ایم پاکستان، تحریک لبیک پاکستان اور جماعت اسلامی نے انتخابی سرگرمیوں کا آغاز کر دیا ہے۔

الیکشن کمیشن نے حال ہی میں این اے 240 کے ضمنی انتخاب کے دوران امن و امان کی صورت حال خراب ہونے کے بعد این اے 245 میں پولنگ کے دن فوج تعینات کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

سیاسی ماہرین کا کہنا ہے کہ ضلع شرقی کا حلقہ این اے 245 انتہائی اہمیت کا حامل ہے کیونکہ کراچی میں سیاست کرنے والی چار بڑی جماعتوں کے مرکزی دفاتر اسی حلقے میں موجود ہیں۔

کراچی کی سیاست میں تحریک لبیک پاکستان کا کردار بڑھ گیا ہے اور حلقہ این اے 240 کی طرح اس حلقے میں بھی ماضی کی کامیاب جماعتوں پاکستان تحریک انصاف اور متحدہ قومی موومنٹ کے لیے یہ سیٹ نکالنا آسان نہیں ہو گا۔

2018 کے عام انتخابات میں پاکستان تحریک انصاف کے امیدوار ڈاکٹر عامر لیاقت حسین اس حلقے سے  56 ہزار سے زائد ووٹ لے کر کامیاب ہوئے تھے، جبکہ ایم کیو ایم پاکستان کے رہنما ڈاکٹر فاروق ستار 35 ہزار ووٹ لے کر دوسرے نمبر تھے۔

اسی طرح تحریک لبیک پاکستان کے امیدوار احمد رضا امجدی 20 ہزار ووٹ لے کر تیسرے نمبر پر رہے تھے۔

الیکشن کمیشن کے مطابق ضلع شرقی حلقہ این اے 245 کی کل آبادی 6 لاکھ 97 ہزار 365 ہے۔

یہاں رجسٹرڈ ووٹرز کی تعداد 4 لاکھ 43 ہزار 540 ہے۔ جن میں دو لاکھ 39 ہزار 893 ووٹرز مرد جبکہ دو لاکھ تین ہزار 647 تعداد خواتین ووٹرز کی ہے۔

الیکشن کمیشن کے شیڈول کے مطابق ضمنی الیکشن 27 جولائی کو ہوں گے۔

You might also like

Leave A Reply

Your email address will not be published.