دعا زہرہ کی ماں عدالت میں بیٹی سے ملنے کے لئے تڑپتی رہی !

اپنی پسند سے شادی کرنے والی دعا زہرہ کو شوہر ظہیر احمد کے ہمراہ چشتیاں سے بازیاب کرائے جانے کے بعد سندھ ہائیکورٹ میں  پیش کردیا گیا جہاں پولیس نے والدین کو بیٹی سے ملاقات کی اجازت  نہیں دی۔

سندھ ہائیکورٹ کے اندرونی مناظر کی ایک  دیکھئے.

ویڈیو میں دیکھا جاسکتا ہے کہ دعا زہرہ کی عدالت آمد پر روتی بلکتی ماں بیٹی سے ملنے کے لیے اس کے پاس پہنچتی ہے لیکن دعا کی سکیورٹی پر مامور اہلکار  نے ماں کو بیٹی سے ملاقات کرنے سے روک دیا۔

دوسری جانب سندھ ہائیکورٹ نے دعا زہرہ کی عمر کے تعین کے لیے میڈیکل کرانے کا حکم دیتے ہوئے لڑکی کو شیلٹر ہوم بھیجنے کی ہدایت کردی۔

عدالت میں دیے گئے بیان میں دعا زہرہ نے کہا کہ اسے اغوا نہیں کیا گیا، اس نے اپنی مرضی سے شادی کی ہے اور وہ شوہر کے ساتھ جانا چاہتی ہے۔

You might also like

Leave A Reply

Your email address will not be published.