کورونا ویکسینیشن کے متعلق نئی تحقیق نے عوام کو پریشان کردیا

دنیا میں جہاں عالمی وبا کورونا وائرس سے بچنے کے لئے ویککسینیشن پر زور دیا جا رہا ہے، وہیں روزانہ نئی تحقیقات عوام کی پریشانیوں میں اضافے کا باعث بن رہی ہیں۔

کورونا وائرس کے خلاف اب تک مختلف ویکسینز سامنے آچکی ہیں اور لوگ یہ فیصلا ہی نہ کر سکے تھے کہ کس ویکسین کا انتخاب کیا جائے، اوپر سے طبی ماہرین کی نئی تحقیق نے لوگوں کو مزید سوچنے پر مجبور کر دیا ۔

جنوبی کوریا میں کئے گئے ایک مطالعے میں یہ بات سامنے آئی ہے کہ کورونا سے بچاؤکے دو مختلف ٹیکے لگوانے سے وائرس کے خلاف قوت مدافعت تمام زیادہ بڑھ جاتی ہے۔

مطالعے میں جن 5 سو کے قریب طبی ورکرز کو وقفے سے ایسٹرا زینیکا اور فائزر بیو ٹیک کے ٹیکے لگائے گئے تھے، ان میں اینٹی باڈیز ان لوگوں کے مقابلے میں 6 گنا زیادہ تھیں، جن کو ایک ہی قسم کے ٹیکے کی دو خوراکیں ملیں۔

اس سے قبل برطانیہ میں بھی ایک سروے میں ایسے نتائج دیکھے گئے تھے مگر اب تک عالمی ادارہ صحت یا کسی طبی ادارے نے باضابطہ طور پر اس عمل کا مشورہ نہیں دیا۔

You might also like

Leave A Reply

Your email address will not be published.