لعاب دہن سے شگر ٹیسٹ کرنے کا آسان طریقا دریافت

شگر کا مرض دنیا میں تیزی سے پھتلا جا رہا ہے جس کی وجہ سے یے بیماری دنیا کی کامن ڈزیز میں شمار کی جاتی ہے

اس بیماری کے تیزی سے بڑھنے کے ساتھ ساتھ روز اول سے ماہرین اس بیماری کو آسانی سے کنٹرول کرنے اورانسان کے جسم میں شگر کےمقدار کومختلف طریقوں سے معلوم کرنے کے لئے کوشاں ہیں

آسٹریلوی ماہرین نے ایک ایسا انقلابی شوگر ٹیسٹ ایجاد کرلیا ہے جس کے ذریعے لعابِ دہن یعنے(تھوک) میں شکر کی مقدار معلوم کرتے کسی شخص کے ذیابیطس میں مبتلا ہونے یا نہ ہونے کا پتا لگایا جاسکتا ہے۔

ڈاکٹر پال دستور اور ان کے ساتھیوں نے ایسے حیاتیاتی حساسیے (بایو سینسرز) بنائے ہیں جو تھوک میں شامل شکر کی مقدار صرف چند سیکنڈ میں معلوم کرسکتے ہیں۔

ڈاکٹر پال نے امید ظاہر کی ہے کہ نئے شوگر ٹیسٹ کےلیے اسٹرپس اور متعلقہ آلہ بنانے کا کارخانہ اس سال کےاختتام تک مکمل ہوجائے گا جبکہ اس سے پہلی تجارتی کھیپ 2023 تک فروخت کےلیے پیش کردی جائے گی۔

You might also like

Leave A Reply

Your email address will not be published.