قربانی کے گوشت کو 3 ہفتوں سے زیادہ نہ رکھیں ورنہ!

کسی بھی چیز کی زیادتی نقصان دہ ہوتی ہے اور یہی معاملہ عید الاضحیٰ کے موقع پر بھی ہوتا ہے، جب لوگ گوشت کا زیادہ استعمال کرکے اپنے لئے مسائل پیدا کر دیتے ہیں۔

غذا میں گوشت کا استعمال پروٹین، آئرن، وٹامنز اور معدنی طاقت تو فراہم کرتا ہے لیکن اس کی زیادتی مختلف بیماریوں سے دوچار کر سکتی ہے۔

عید قرباں کے بعد عموماً گھروں میں گوشت کو کئی کئی ہفتے یا مہینوں تک فریز کرکے رکھا جاتا ہے لیکن ایسا کرنے سے گوشت میں جراثیم پیدا ہو سکتے ہیں،  اس لیے ماہرین صحت کہتے ہیں کہ گوشت کو 3 ہفتوں سے زیادہ فریز نہیں کرنا چاہئے۔

ماہرین کے مطابق خوراک میں روزانہ صحت کے لئے 90 گرام اور ہفتہ میں 500 گرام تک گوشت کا استعمال مفید ہوتا ہے تاہم اس میں زیادتی صحت کے مسائل کا سبب بن سکتی ہے۔

ماہرین کا یہ بھی کہنا  ہے کہ بہت زیادہ گوشت کا استعمال کولیسٹرول ، فیٹ، بلڈ پریشر اور پیٹ کے امراض میں اضافے کا باعث بنتا ہے، جس سے انسانی قوت مدافعت اور صحت بری طرح متاثر ہوتی ہے۔

اکثر عیدالاضحی کے فورا بعد لوگوں میں قبض سمیت پیٹ کے امراض بھی بڑھ جاتے ہیں، جس کی ایک وجہ گوشت کے استعمال میں زیادتی ہو سکتی ہے۔

ماہرین کے مطابق کسی بھی پریشانی سے بچنے کے لیے عید کے دنوں میں کھانوں کے ساتھ ٹھنڈی چیزوں، مثلاًَ دہی، رائتے اور سلاد کے ساتھ ساتھ رات کو سونے سے قبل اسپغول کا استعمال مفید ثابت ہو سکتا ہے۔

You might also like

Leave A Reply

Your email address will not be published.