کورونا بحران: بھارتی ڈاکٹر سخت ذہنی دباؤ کا شکار، خودکشیاں کرنے لگے

بھارت میں کورونا وائرس سے صورتحال اس قدر بگڑ گئی ہے کہ اب وبا سے پیدا ہونے والے بحران کے باعث ڈاکٹرز بھی خود کشیاں کرنے لگے ہیں۔

بھارتی دارالحکومت دہلی کے ایک نجی ہسپتال کے آئی سی یو میں کورونا مریضوں کا علاج کرنے والے ایک پینتیس سالہ ڈاکٹر وویک رائے نے گزشتہ دنوں دہلی میں اپنے گھر میں خودکشی کرلی، وہ سخت ذہنی دباؤ کا شکار تھے۔

انڈین میڈیکل ایسوسی ایشن کے مطابق کورونا  کا علاج کرنے والے ڈاکٹرز غیر معمولی حالات میں مسلسل کام کرنے پر مجبور ہیں  اور ان میں ذہنی دباؤ بڑھ رہا ہے، ڈاکٹروں کو آرام نہیں مل رہا ہے، ان کے لیے کوئی پروٹوکول نہیں ہیں۔

ہسپتال میں علاج کے دوران جب کسی مریض کی موت واقع ہو جائے تو بعض اوقات ان کے رشتہ دار ہنگامہ کردیتے ہیں اور ڈاکٹروں کو بھی ان کے عتاب کا نشانہ بننا پڑتا ہے، جبکہ حالیہ دنوں میں ڈاکٹروں اور نرسوں پر حملوں کے متعدد واقعات سامنے آئے ہیں۔

ڈاکٹروں کی ملک گیر تنظیم کے مطابق کورونا کی وجہ سے بھارت میں اب تک تقریباً ساڑھے سات سو ڈاکٹروں کی موت ہو چکی ہیں جبکہ نیم طبی عملے کی تعداد ان کے علاوہ ہے۔

ادھر ماہرین نفسیات کا کہنا ہے کہ خود ڈاکٹروں کے نفسیاتی مریض بن جانے کا اصل پتہ اس وقت چلے گا جب یہ وبا ختم ہو گی۔

You might also like

Leave A Reply

Your email address will not be published.