ڈی ایچ اے اور سی بی سی کے خلاف ڈیفنس کے رہائشی عدالت پہنچ گئے

کراچی میں جمعرات کو ریکارڈ توڑبارشوں کے بعد جہاں شہر کےمتوسط اورنچلے طبقے کے علاقوں میں تباہی آئی وہیں شہر کا پوش علاقہ ڈیفینس بھی بری طرح متاثر ہوا

شہرمیں بادل برسے ایک ہفتہ ہونے کو ہے لیکن ڈیفنس کے علاقے چھوٹا شہباز، اتحاد کمرشل، نشاط، مسلم، راحت، غازی اور بخاری کمرشل کی رہائشی عمارتوں کی بیس منٹس میں آج  بھی کئی کئی فٹ پانی جمع ہے۔

ڈیفنس کے فیز چھ، سات اور آٹھ حالیہ بارشوں کے بعد بری طرح متاثر ہوئے ہیں، جہاں کی سڑکوں پر آج بھی تین سے چار فٹ پانی ہے، جس کے باعث ان علاقوں میں بجلی، پانی، انٹرنیٹ اور فون سروس میسر نہیں اور لوگ اپنے گھروں میں محصورہیں۔

مہنگے ترین علاقے میں بھی سہولتوں سے محروم رہائشیوں نے جب اپنا احتجاج رکارڈ کروایا تو انتظامیہ نے ان کے مسائل حل کرنے کی بجائے ان پر ہی مقدمہ درج کروادیا

ڈیفنس میں بارش سے گھروں اور علاقے کی تباہی سے پریشان حال افراد اپنے خلاف مقدمہ دائر ہونے پر مشتعل ہوگئے اورہاوسنگ اتھارٹی کی انتظامیہ کے خلاف قانونی راستہ اختیار کرتے ہوئے سندھ ہائی کورٹ سے رجوع کرلیا اورانتظامی غفلت پرڈیفنس ہاؤسنگ اتھارٹی اور کنٹونمنٹ بورڈ کلفٹن کی انتظامیہ کے خلاف درخواست دائر کردی ۔۔ علاقہ مکینوں کا دعویٰ ہے کہ بھاری بھر کم ٹیکسز جمع کرنے کے باوجود ان اداروں نے رہایشیوں کو بہتر انفراسٹرکچر فراہم نہیں کیا۔ عدالت نے دونوں اتھارٹیز کو نوٹس جاری کردیے ہیں ۔۔۔ ڈی ایچ اے کی انتظامیہ کے سامنے آج بھی علاقہ مکینوں نے پر امن احتجاج جاری رکھا اور انتظامیہ سے مطالبہ کیا کہ وہ ان کے مطالبات پورے کرے

You might also like

Leave A Reply

Your email address will not be published.